کانگریس کا شرم ناک رویہّ!
کانگریس کا شرم ناک رویہّ!

✍️شکیل رشید (ایڈیٹر ممبئی اردو نیوز) ___________________ لوک سبھا کے انتخابات میں اپنی ’بہترکامیابی‘ کے بعد کانگریس نے ایک اور ’ تیر مارلیا ہے ‘۔ کانگریس کی ترجمان سپریا شرینیت نے مودی حکومت کی ایک مہینے کی کارکردگی پر رپورٹ کارڈ پیش کیا ہے ، جس میں مرکزی سرکار کوآڑے ہاتھوں لیا ہے ۔ یہ […]

کانگریس کا شرم ناک رویہّ!
غم جہاں سے نڈھال سراپا درد و ملال!!
غم جہاں سے نڈھال سراپا درد و ملال!!

✍️ جاوید اختر بھارتی محمدآباد گوہنہ ضلع مئو یو پی _____________ دینی ، سیاسی ، سماجی اور تعلیمی مضامین اکثر و بیشتر لکھا جاتاہے اور چھوٹے بڑے سبھی قلمکار لکھتے رہتے ہیں مگر ضروری ہے کہ کچھ ایسے موضوع بھی سامنے آئیں جو حقائق پر مبنی ہوں یعنی آپ بیتی ہوں مرنے کے بعد تو […]

غم جہاں سے نڈھال سراپا درد و ملال!!
جمہوری سیکولر سیاست میں دھرم کی مداخلت: ہندوستانی تناظر میں
جمہوری سیکولر سیاست میں دھرم کی مداخلت: ہندوستانی تناظر میں

✍️ محمد شہباز عالم مصباحی ____________ جمہوریت کا مفہوم ہی اس بات پر منحصر ہے کہ عوامی رائے کو فیصلہ سازی میں اولیت دی جائے اور ہر شہری کو یکساں حقوق اور مواقع فراہم کیے جائیں۔ سیکولرزم، جمہوریت کی بنیاد کو مضبوط کرتا ہے، جس کا مطلب یہ ہے کہ ریاست کو مذہبی معاملات میں […]

جمہوری سیکولر سیاست میں دھرم کی مداخلت: ہندوستانی تناظر میں
کیجریوال کا قصور
کیجریوال کا قصور

✍️ مفتی محمد ثناء الہدیٰ قاسمی نائب ناظم امارت شرعیہ بہار اڈیشہ و جھاڑکھنڈ ________________ دہلی کے وزیر اعلیٰ اروند کیجریوال کی پریشانیاں دن بدن بڑھتی جارہی ہیں، نچلی عدالت سے ضمانت ملتی ہے، ہائی کورٹ عمل در آمد پر روک لگا دیتا ہے، سپریم کورٹ میں عرضی داخل کرتے ہیں، اس کے قبل ہی […]

کیجریوال کا قصور
این جی اوز اور فلاحی اداروں میں علماء کا رول
این جی اوز اور فلاحی اداروں میں علماء کا رول

✍️ نقی احمد ندوی ________________ اس میں کوئی شک نہیں کہ علماء و فارغینِ مدارس اور طلباء کے اندر قوم و ملت اور ملک کی خدمت کا جو حسین جذبہ پایا جاتا ہے وہ عصری تعلیم گاہوں کے فارغین کے اندر عنقا ہے۔ این جی اوز اور فلاحی ادارے ان کے اس حسین جذبہ استعمال […]

این جی اوز اور فلاحی اداروں میں علماء کا رول
previous arrow
next arrow
Shadow

بھارت سری لنکا ٹی ٹونٹی سریز آج سے

بھارتی ٹیم ہاردک پانڈیا کی قیادت میں 2024 میں  بہتر بنیاد رکھنے کے لیے میدان میں اترے گی۔

دونوں ٹیم تین میچوں کی سریز کھیلے گی۔

 بھارتی ٹیم سری لنکا کے خلاف تین میچز کی  سریز اپنے تین اسٹار کھلاڑی روہت شرما، سابق کپتان وراٹ کوہلی اور کے ایل راہل کے بغیر کھیلنے اترے گی۔ ہاردک پانڈیا کو مستقبل کی تیاری کے لیے قیادت سونپی گئی ہے اور کرکٹ شائقین کو ہاردک کی بہترین قیادت دیکھنے کو مل سکتی ہے۔اس سے قبل نیوزی لینڈ میں وہ اپنی بہتر قیادت کی جھلک دکھا چکے ہیں۔    2024 میں  ونڈے کا عالمی کپ کھیلا جانا ہے ،ایسے میں بی سی سی آئی کے لیے یہ فارمیٹ قابل ترجیح نہیں ہے۔ لیکن اسے ۲۰۲۴ کے مشن کے طور پر دیکھا جارہا ہے اور امید کی جارہی ہے کہ ٹی ٹونٹی کی مستقل قیادت ہاردک پانڈیا کے سپرد کی جاسکتی ہے۔یہی وجہ ہے کہ سری لنکا کے خلاف سریز میں کئی نئے کھلاڑی کو اپنے جوہر دکھانے کا موقع ملے گا۔ٹی ٹوینٹی عالمی کپ 2024 کی طرف  بڑھتے ہوئے بھارت اس فارمیٹ میں نئی ٹیم بنانے کی کوششوں کی طرف گامزن ہے۔ جہاں سوریہ کمار یادو کو نائب کپتان کے روپ میں میدان میں نظرآئیں گے۔ وہیں ایشان کشن، اور رتوراج گائیگواڑ کافی عرصے کے بعد ٹیم میں واپسی کی ہے۔ اچھا کرنے کی کوشش کریں گے۔راہل ترپاٹھی، شیوم ماوی، اور مکیش کمار کو بھی اس سریز میں موقع مل سکتا ہے۔  ممبئی کے وانکھیڑے اسٹیڈیم میں آج شام ۷ بجے سے میچ کا آغاز ہوگا۔

Leave a Comment

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Scroll to Top
%d bloggers like this: