تعزیہ سے بت پرستی تک!
تعزیہ سے بت پرستی تک!

از: شمس الدین سراجی قاسمی ______________ “أَيْنَ تَذْهَبُونَ” تم کہاں جارہے ہو ، محرم الحرام تو اسلامی تقویم ہجری کا پہلا مہینہ ہے اور تم نے پہلے ہی مہینہ میں رب کو ناراض کر دیا، اب یہ بات کسی پر پوشیدہ نہیں کہ محرم الحرام میں کئے جانے والے اعمال، بدعات ہی نہیں بلکہ کفریات […]

ماہِ محرم الحرام کی بدعات و خرافات
ماہِ محرم الحرام کی بدعات و خرافات

از: عائشہ سراج مفلحاتی __________________ محرم الحرام اسلامی سال کا پہلا مہینہ ہے، جو اشھر حرم، یعنی حرمت والے چار مہینوں میں سے ایک ہے، احادیث میں اس ماہ کی اہمیت وفضیلت مذکور ہے، یومِ عاشوراء کے روزے کی فضیلت بیان‌ کی گئی ہے، جو اسی ماہ کی دسویں تاریخ ہے؛ لیکن افسوس کی بات […]

معرکۂ کربلا کے آفاقی اصول اور پیغام
معرکۂ کربلا کے آفاقی اصول اور پیغام

از: محمد شہباز عالم مصباحی _______________ یہ تجزیاتی مقالہ کربلا کی عظیم الشان جنگ اور اس کے آفاقی پیغام کا جائزہ لیتا ہے۔ امام حسین (ع) اور ان کے ساتھیوں کی قربانیوں کو ایک تاریخی اور اخلاقی واقعے کے طور پر پیش کیا گیا ہے جو نہ صرف مسلمانوں بلکہ پوری انسانیت کے لیے ایک […]

تبصرہ نگاری ایک طرح کی گواہی ہے
تبصرہ نگاری ایک طرح کی گواہی ہے

✍️ڈاکٹر ظفر دارک قاسمی zafardarik85@gmail.com ________________ تبصرہ نگاری نہایت دلچسپ اور اہم فن ہے ۔ تبصرے متنوع مسائل پر کیے جاتے ہیں ۔ مثلا سیاسی ،سماجی ، ملکی ، قانونی احوال و واقعات وغیرہ وغیرہ ۔ لہٰذا اس موضوع پر مزید گفتگو کرنے سے قبل مناسب معلوم ہوتا ہے کہ پہلے تبصرے کا مفہوم و […]

ملک میں تین نئے فوجداری قانون کا نفاذ
ملک میں تین نئے فوجداری قانون کا نفاذ

✍️ مفتی محمد ثناء الہدیٰ قاسمی نائب ناظم امارت شرعیہ بہار اڈیشہ و جھاڑکھنڈ _________________________ انڈین پینل کوڈ (آئی پی سی) 1860، کرمنل پروسیجر کوڈ (سی آر پی سی) 1898 اور انڈین ایویڈنس ایکٹ 1872 ایک جولائی 2024ء سے تاریخ کے صفحات میں دفن ہوگئے ہیں، ان کی جگہ بھارتیہ نیائے سنہیتا، بھارتیہ ناگرگ سورکچھا […]

previous arrow
next arrow

مدارس ملحقہ کے پرنسپل کا سہ روزہ تربیتی پروگرام بحسن و خوبی اختتام پذیر

رپورٹ/سیل رواں:

’’ تعلیم نوبالغاں پروگرام‘‘ کا سہ روزہ تربیتی پروگرام اختتام پذیر، مدارس ملحقہ کے ۴۲صدور مدرسین کی شرکت، اختتامی اجلاس میں مانو دربھنگہ کیمپس کے پروفیسرجناب افروز عالم کا خطاب اور اسناد کی تقسیم

جامعہ ، مانو  اور یونیسیف کے تعاون سے بہار اسٹیٹ مدرسہ ایجوکیشن بورڈ پٹنہ  کی جانب سے مدارس ملحقہ میں تعلیم کی بہتری کے لیے مختلف طرح کی کوششیں کی جاری ہیں۔بورڈ کا  معروف و مشہور پروگرام ’’ تعلیم نو بالغاں ‘‘ ان ہی کوششوں کا ایک حصہ ہے جو  گذشتہ کئی سالوں سے چلایا جارہا ہے۔ جس کے مثبت اثرات زمینی سطح پر دیکھے جارہے ہیں۔ اس سے قبل مدارس ملحقہ کے نوڈل اساتذہ کی ٹریننگ ہوئی تھی۔جس میں دو اساتذہ کرام ہر مدرسہ سے منتخب کیے گئے تھے۔اس بار ٹریننگ کے لیے مدارس ملحقہ کے صدور مدرسین بلائے گئے تھے۔

’’ تعلیم نوبالغاں‘‘ کا یہ پروگرام مدرسہ اشاعت العلوم امور ، ضلع پورنیہ، بہار میں مورخہ ۱۸؍ستمبر ۲۰۲۳/بروز سوموار نو بجے دن سے شروع ہوا۔ اجس میں مدارس ملحقہ کے ۴۲ صدور مدرسین نے شرکت کی۔ ابتدائی پروگرام تعارف کے لیے رکھا گیا تھا۔ جس میں مانو دربھنگہ کیمپس کے پروفیسر جناب افروز عالم صاحب کی شرکت ہوئی اور انہوں نے اپنے افتتاحی خطاب میں پروگرام کے خدوخال، مدارس ملحقہ کے مسائل  اور ترقی وسائل اور امکانات  پر گفتگو کی۔ اس موقع پر انہوں نے  پرنسپل حضرات کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ اس طرح کے  تربیتی پروگرام کا مقصد ملحقہ مدارس کے تعلیمی نظام کو بہتر بنانا، درپیش مسائل کو حل کرنا اور مدارس ملحقہ مثالی مدارس کیسے بنیں پر غور وخوض کرنا ہے۔  انہوں نے مزید کہا کہ کسی بھی ادارے کو چلانے کیلئے صدر مدرس کو مختلف مسائل اور چنوتیوں کا سامنا کرنا پڑتا ہے، ان مسائل کے حل کی کیا کیا شکلیں ہوسکتی ہیں اور ایک صدر مدرس کے کیا کیا اختیارات ہوتے ہیں اس بارے میں آپ کی رہنمائی کرنا بھی ہمارے اس تربیتی پروگرام کا حصہ ہے۔ 

چنانچہ سہ روزہ تربیتی پروگرام میں ادارے کے نظم و ضبط ، معیار تعلیم کی بہتری، گائڈ لائن کے مطابق امور کی انجام دہی  پر اظہار خیال کے علاوہ گارجین سے برتاؤ، بچوں کے نفسیات کو سمجھنے کا طریقہ ، داخلہ جاتی کاروائی میں تعاون کے طریقہ کار اور آفشیل لوگوں سے کیسے رابطہ کرنا اور وسائل کی فراہمی کے لیے کن طریقوں کو اپنایا جاسکتا ہے ۔ جیسے امور کو عملی طور پر کرکے دکھایا گیا ۔

اختتامی پروگرام کا آغاز ۲۰؍ستمبر ۲۰۲۳ بروز بدھ کو صبح نو بجے ہوا۔ صدور مدرسین مدارس ملحقہ سے درخواست کی گئی کہ اب تک  انجام دئے گئے اکٹی وٹیز پر اظہار خیال کریں۔ یکے بعد دیگرے کئی صدور مدرسین نے اظہار خیال کرتے ہوئے کہاکہ بہت خوبصورت ترتیب ہے ، اس سے بلاشبہ فائدہ ہوگا  اور منتظمہ سے درخواست کہ کی اس طرح کے  تربیتی پروگرام وقفہ وقفہ سے منعقد ہوتے رہا کریں ،ساتھ ہی پرنسپل حضرات نے  ’’ تعلیم نوبالغان پروگرام‘‘ کے منتظمین کو یقین دلایا کہ انشائ اللہ اپنے اپنے مدرسوں میں یہاں سے سیکھی گئی چیزوں کو نافذ کرنے کی کوشش کریں گے۔ پروگرام میں مفتی عبدالغنی قاسمی مدرسہ صفات العلوم اورا، مولانا عاقل اختر ندوی مدرسہ محصیل، مولانا عارف حسین ندوی مدرسہ غنچہ اسلام دھرمباڑی، مولانا شاہ عالم مدرسہ کانی مالدھی،مفتی مطیع الرَّحمان مدرسہ رحمانیہ کھپرہ، مولانا محمد عمران ندوی اشاعت العلوم امور،حافظ محمد مظہر مدرسہ دلمال پور،حافظ محمد سالم مدرسہ شہریا، مولانا نافع اختر مدرسہ نندنیاں،مولانا محمد ثاقب قاسمی مدرسہ کھتا ٹولی، مولانا اکمل یزدانی مدرسہ پلنکاف، مولانا محمد اکمل مدرسہ چندیل، محمد ابصار مدرسہ تتلیا، مولانا محمد غلام جیلانی مدرسہ پانکی، مولانا قیصر الزماں مدرسہ چنی ڈوریا، حافظ محمد رضوان مدرسہ سرجاپوروغیرہ نے شرکت کی۔

اخیر میں ڈائریکٹر ’’تعلیم نوبالغان پروگرام’’ جناب افروز عالم صاحب پروفیسر مانو کے ہاتھوں اسناد کی تقسیم ہوئی۔ ٹرینرمحمد گل ریز، حافظ محمد منظور،  فسلیٹر محمد جاں نثار کا شکریہ ادا کرتے ہوئے مجلس کے اختتام کا اعلان کیا گیا۔ 

Leave a Comment

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Scroll to Top
%d bloggers like this: