تعزیہ سے بت پرستی تک!
تعزیہ سے بت پرستی تک!

از: شمس الدین سراجی قاسمی ______________ “أَيْنَ تَذْهَبُونَ” تم کہاں جارہے ہو ، محرم الحرام تو اسلامی تقویم ہجری کا پہلا مہینہ ہے اور تم نے پہلے ہی مہینہ میں رب کو ناراض کر دیا، اب یہ بات کسی پر پوشیدہ نہیں کہ محرم الحرام میں کئے جانے والے اعمال، بدعات ہی نہیں بلکہ کفریات […]

ماہِ محرم الحرام کی بدعات و خرافات
ماہِ محرم الحرام کی بدعات و خرافات

از: عائشہ سراج مفلحاتی __________________ محرم الحرام اسلامی سال کا پہلا مہینہ ہے، جو اشھر حرم، یعنی حرمت والے چار مہینوں میں سے ایک ہے، احادیث میں اس ماہ کی اہمیت وفضیلت مذکور ہے، یومِ عاشوراء کے روزے کی فضیلت بیان‌ کی گئی ہے، جو اسی ماہ کی دسویں تاریخ ہے؛ لیکن افسوس کی بات […]

معرکۂ کربلا کے آفاقی اصول اور پیغام
معرکۂ کربلا کے آفاقی اصول اور پیغام

از: محمد شہباز عالم مصباحی _______________ یہ تجزیاتی مقالہ کربلا کی عظیم الشان جنگ اور اس کے آفاقی پیغام کا جائزہ لیتا ہے۔ امام حسین (ع) اور ان کے ساتھیوں کی قربانیوں کو ایک تاریخی اور اخلاقی واقعے کے طور پر پیش کیا گیا ہے جو نہ صرف مسلمانوں بلکہ پوری انسانیت کے لیے ایک […]

تبصرہ نگاری ایک طرح کی گواہی ہے
تبصرہ نگاری ایک طرح کی گواہی ہے

✍️ڈاکٹر ظفر دارک قاسمی zafardarik85@gmail.com ________________ تبصرہ نگاری نہایت دلچسپ اور اہم فن ہے ۔ تبصرے متنوع مسائل پر کیے جاتے ہیں ۔ مثلا سیاسی ،سماجی ، ملکی ، قانونی احوال و واقعات وغیرہ وغیرہ ۔ لہٰذا اس موضوع پر مزید گفتگو کرنے سے قبل مناسب معلوم ہوتا ہے کہ پہلے تبصرے کا مفہوم و […]

ملک میں تین نئے فوجداری قانون کا نفاذ
ملک میں تین نئے فوجداری قانون کا نفاذ

✍️ مفتی محمد ثناء الہدیٰ قاسمی نائب ناظم امارت شرعیہ بہار اڈیشہ و جھاڑکھنڈ _________________________ انڈین پینل کوڈ (آئی پی سی) 1860، کرمنل پروسیجر کوڈ (سی آر پی سی) 1898 اور انڈین ایویڈنس ایکٹ 1872 ایک جولائی 2024ء سے تاریخ کے صفحات میں دفن ہوگئے ہیں، ان کی جگہ بھارتیہ نیائے سنہیتا، بھارتیہ ناگرگ سورکچھا […]

previous arrow
next arrow

حضرت امیرِشریعت سادس کاعملِ پیہم امّت کےلیۓ مشعلِ راہ ہے

    از:-  عبدالرحمٰن ندوی، ہلدیہ، ارریہ ،بہار ،انڈیا

    دین متین کی بقاوحفاظت کےلیۓربّ حکیم نےایک بڑی نعمت عبقری شخصیات کی شکل میں امّت مسلمہ کو  مرحمت فرمایا،ہردورمیں منجانبِ الٰہی ایسےرجال وجود میں آتےرہےجنہوں نےشریعت حقّہ کی صحیح ترجمانی آئندہ آنےوالی نسلوں کی طرف منتقل کرتےرہے،اوراسلام کواپنی اصل صورت وہیئت میں پیش کرتےرہے،انہیں سلسلةالذہب کی ایک کڑی اللّٰہ پاک نےسرزمین ہندکوبالعموم اوربہارواڑیسہ وجھارکھنڈکوبالخصوص حضرت سیدنظام الدین صاحبؒ قاسمی نوّراللّٰہ مرقدہٗ وبردمضجعہٗ امیرِ شریعت سادس”امارت شرعیہ بہارواڑیسہ وجھاکھنڈ” وجنرل سکریٹری”آل انڈیامسلم پرسنل لاءبورڈ” کی شکل میں عطافرمایا،واقعہ یہ ہےکہ یہ ایک ہستی تھی جوبیک وقت کئی اوصاف وکمالات کی حامل تھی،بلاشبہ امت مسلمہ کےلیۓایک بہت ہی متبرک ذات تھی،سادگی و اعتدال،دوراندیشی میں اپنی مثال آپ تھی،آپؒ کاعملِ پیہم امّت محمّدیہ کےلیۓمشعلِ راہ تھا، حضرت رحمةاللّٰہ بڑے مدبّر،مفکّر،نبّاض اوررمزشناس تھے،مخلتف طبقات میں آپؒ کی بےحدمقبولت ومحبت تھی،بنابریں کئی ادارے،مدارس، جامعات،  دینی تنظیموں کےسرپرست ورکن اورممبررہے۔

      بےحدمسرت وفرحت کاموقع یہ آرہاہےکہ حضرت امیرشریعت سادسؒ کےہونہارفرزندارجمندسیدعبدالواحد صاحب ندوی دامت برکاتہم العالیہ چیئرمین”مولانانظام الدین فاؤنڈیشن” اپنےپدربزرگوارؒپرایک سیمینار”مولانانظام الدین فاؤنڈیشن”کےزیراہتمام منعقدکرنےجارہےہیں،میں تہہ دل سےاِس کامؤیّدہوں،درحقیقت یہ اقدام بہت قابلِ تہنیت ہے،باعثِ سعادت ہے،ساتھ ہی ساتھ یہ وقت کی ایک ضرورت بھی ہے،تاکہ حضرت سیدنظام الدین صاحبؒ کے دینی ملّی،رفاہی،سماجی کارنامےوخدمات امت کےسامنے اس مقصدکےتئیں لایاجائیں کہ مستقبل کی نسلوں کےلیۓ مشعلِ راہ ثابت ہوں،چوں کہ حضرت مرحوم کی شخصیت بڑی فعّال ومتحرک تھی،ہروقت امّت کی فلاح وبہبودکےلیۓ سرگرم عمل رہتےتھے،  کسی بھی کام آغازکابڑےغوروفکر  بعدہی کرتےتھے،اورجب تک اُس کام کی تکمیل نہ ہوجاتی آپؒ سکون سےنہیں رہتےتھے،اپنےآپ کوہمہ وقت سستی و سطحی شہرت سےدوررکھا،سادگی گویاآپؒ کی خمیرمیں رکھ دی گئی تھی،تواضع وانکساری کاپیکرتھے،”ہٹوبچو” کی کیفیت سےسخت نفرت تھی،حضرتؒ کاسب سےبڑا تابناک کارنامہ”امارت شرعیہ”ہے،جس کی ترقی وآبیاری کےلیۓاپنی زیست کاعرصہءطویل وقف کردیا،آپؒ کی خدمات کادائرہ تقریبًانصف صدی تک محیط ہے،”امارت شرعیہ” کےجتنےشعبےہیں سب آپؒ کےمرہونِ منّت ہیں، آپؒ نےتحفّظِ دین متین، بقاۓاسلام کےلیۓکارہاۓنمایاں انجام دیۓ،جن سےفراموشی کاجوازکسی بھی ناحیہ سےقطعًا درست نہیں۔امّت مسلمہ کوچاہیۓکہ حضرت کی عملی زندگی سےدرس اخذکرے اوراُن کےورثہ کی دل وجان سےحفاظت کرے،اُسےزندہ وتابندہ رکھے۔

Leave a Comment

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Scroll to Top
%d bloggers like this: